‘فیڈریشن ذمہ داری پوری نہیں کررہی ہے’: سندھ میں لوڈشیڈنگ سے نمٹنے میں ناکامی پر ایس سی کا غصہ

منگل کے روز چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد نے حکام بالخصوص وفاقی حکومت کو سندھ میں بجلی کی ضرورت سے زیادہ لوڈشیڈنگ کے لئے کام کرنے کا مشاہدہ کیا ، انہوں نے کہا کہ "فیڈریشن اپنی ذمہ داری پوری نہیں کررہی ہے"۔


جسٹس احمد صوبے میں غیر اعلانیہ بجلی کی لوڈشیڈنگ سے متعلق ازخود موٹو کیس کی سماعت کرنے والے تین ججوں کے بینچ کی سربراہی کر رہے تھے۔



وفاقی حکومت اور نیشنل الیکٹرک اینڈ پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) کی طرف سے پیش کردہ رپورٹس کو غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے اس معاملے کی وضاحت کرتے ہوئے عدالت عظمیٰ نے نومبر میں شیڈول اگلی سماعت میں نئی رپورٹیں طلب کرنے کا مطالبہ کیا۔


چیف جسٹس نے کہا ، "یہ اطلاعات واضح تصویر نہیں پیش کرتی ہیں ،" انہوں نے مزید کہا کہ نہ تو وفاقی اور نہ ہی صوبائی حکومتیں اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے کچھ نہیں کر رہی ہیں۔ انہوں نے ریمارکس دیئے کہ "فیڈریشن اپنی ذمہ داری پوری نہیں کررہی ہے۔ 

‘فیڈریشن ذمہ داری پوری نہیں کررہی ہے’: سندھ میں لوڈشیڈنگ سے نمٹنے میں ناکامی پر ایس سی کا غصہ ‘فیڈریشن ذمہ داری پوری نہیں کررہی ہے’: سندھ میں لوڈشیڈنگ سے نمٹنے میں ناکامی پر ایس سی کا غصہ Reviewed by Nokriads.com on اکتوبر 13, 2020 Rating: 5

کوئی تبصرے نہیں:

تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.